127

کورونا وائرس کے خلاف جنگ قوم کے متفقہ عزم کے ساتھ جیتی جائے گی: وزیر اعظم

کورونا وائرس کے خلاف جنگ قوم کے متفقہ عزم کے ساتھ جیتی جائے گی: وزیر اعظم

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا۔

میٹنگ میں کورونواائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال اور اس سے نمٹنے کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔

شرکاء نے بیٹھنے کے انتظامات میں معاشرتی فاصلے کا مشاہدہ کرتے ہوئے کورونا وائرس سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر کا عملی مظاہرہ کیا۔

وزیر اعظم عمران خان نے امید کا اظہار کیا ہے کہ قوم کے متحدہ عزم کے ساتھ کورونا وائرس کے خلاف جنگ جیت جائے گی۔

جمعہ کو اسلام آباد میں قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کے بعد اینکرپرسنز سے گفتگو کرتے ہوئے ، انہوں نے کہا کہ پاکستان کے مخصوص حالات کی وجہ سے اس میں اضافے کا ردعمل ضروری ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ملک میں غریب عوام کی حالت کو مدنظر رکھتے ہوئے مکمل لاک ڈاؤن ممکن نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج چاروں صوبوں ، آزادکشمیر اور گلگت بلتستان نے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا ہے کہ سامان کی نقل و حمل پر بین الصوبائی پابندی نہیں ہوگی۔

اسی طرح خوردنی اشیا سے وابستہ صنعت بھی کسی بھی قسم کی پابندی سے آزاد ہوگی۔ تاہم ، مسافروں کی آمدورفت سڑکوں پر ہی رہے گی۔

وزیر اعظم نے گھروں میں کھانا تقسیم کرنے کے لئے کورونا ریلیف ٹائیگر فورس کے نام سے رضاکاروں کی یوتھ فورس تشکیل دینے کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے ممبران کو پی ایم آفس پورٹل کے ذریعے بھرتی کیا جائے گا اور رجسٹریشن اس مہینے کی 31 تاریخ سے شروع ہوگی۔

وزیر اعظم نے کورونا وائرس کے لئے فنڈ کے قیام کا بھی اعلان کیا۔

عمران خان نے کہا کہ وہ آئندہ ہفتے اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں کھاتہ کھولیں گے جہاں ملک کو معاشی بحران سے نکالنے کے لئے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے چندہ اکٹھا کیا جائے گا۔

اس موقع پر وزیر برائے قومی غذائی تحفظ مخدوم خسرو بختیار نے کہا کہ ملک میں ایک پوائنٹ چھ لاکھ ٹن گندم کا ذخیرہ دستیاب ہے جو اگلی فصل کی کٹائی تک کافی ہے۔

انہوں نے کہا کہ گندم کی خریداری کے لئے تمام صوبوں کے ہم آہنگی کے ساتھ ایک مناسب طریقہ کار وضع کیا جارہا ہے۔

نیشنل ہیلتھ سروسز کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ آئندہ ماہ کی پانچویں تک تمام فرنٹ لائن ہیلتھ عملے کو ذاتی تحفظ کے سازوسامان دستیاب ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ وبائی صورتحال سے نمٹنے کے لئے آئندہ چار سے پانچ ہفتوں میں ڈاکٹروں ، نرسوں اور پیرامیڈیکسٹس کو ایک مختصر کریش کورس کرایا جائے گا۔

وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا کہ آج کی این سی سی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ ملک کی ضروریات کو جانچنے کے لئے ضروری اشیاء کی ایک فہرست تیار کی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں