137

چین کے خود مختار علاقے تبت میں بارغوراسٹریٹ کرونا وبا کے باعث تین ماہ سے جاری لاک ڈاؤن کے بعد کھل گئیں۔

(خصوصی رپورٹ):۔ چین کے جنوب مغرب میں واقع تبت کے خودمختار علاقے میں بارغور جو اپنے قدرتی مقامات کے حوالے سے خصوصی شہرت رکھتا ہے، کرونا وبا کے حوالے سے گزشتہ تین ماہ سے جاری لاک ڈاؤن کے خاتمے کے بعد گزشتہ دنوں آخرِ کار دوبارہ کھول دیا گیا ہے۔ اس حوالے سے میسیجنگ ایپ Wechatپر گروپ اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے بارغور سٹریٹ کے ایک دکاندار نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے خاتمے کے بعد دکانوں کا دوبارہ سے کھلنا ہمارے لیے باعثِ مسرت ہے، اور اس حوالے سے بارغور اسٹریٹ کے سبھی دکاندار بہت خوش ہیں وانگ ژی جیانگ بارغور اسٹریٹ میں ایک فوٹو گرافی کی دکان چلاتے ہیں، اور گزشتہ بیس منٹ میں ہی اسے اپنے پرانے کلائنٹس کی جانب سے دو کالز موصول ہو چکیں ہیں جو بارغور اسٹریٹ میں تبتی پوشاکوں میں تصاویر بنوانے کے خواہشمند تھے۔ اس علاقے میں لاک ڈاؤن کے اختتام کے ساتھ ہی مختلف پر کشش امور کے دوبارہ شروع ہوتے ہیں سیاح پہنچنے شروع ہو چکے ہیں۔ اس کے اسٹوڈیو میں مشرقی چین کے شیڈونگ صوبے کا ایک سیاح فوٹو گرافرز کئساتھ بات چیت کرتے ہوئے مختلف نمونوں کی تصاویر بھی دیکھ رہا ہے۔ علاقے کے قدرتی مناظر نے لطف اندورز ہوتے سیاح نے کہا کہ ہم شیڈونگ سے یہاں پہنچے ہیں، اور ہم سبھی نے راستے میں حسین مناظر کا بہت لطف اٹھایا، ہم یہاں لطف اندورز ہونے کے لیے آئے ہیں کیونکہ گزشتہ تین ماہ سے جاری لاک ڈاؤن کے سبب ہم لوگ اپنے گھروں میں قید ہو چکے تھے۔ وانگ نے اپنے ایک اسسٹنٹ سے فوٹو ایڈٹ کرنے اور ایک تحفظات رکھنے والے کسٹمر سے رابطہ کرنے کے لیے کہا تبت میں روایتی ملبوسات میں تصاویر بنوانا یہاں آنے والے سیاحوں کا پسندیدہ مشغلہ ہے۔ وانگ ژی کیانگ آرٹس اینڈ دستکاری کی دکان کے ایک حصے میں اپنی دک

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں